عورتیں شنی مندر آئیں گی تو ریپ کے واقعات بڑھیں گے

منگل, 12 اپریل 2016 12:58
بھارت میں ہندوؤں کے مذہبی رہنما کے اس بیان پر سخت تنقید ہو رہی ہے جس میں انھوں نے کہا تھا کہ شنی دیوتا کے مندر میں خواتین کے جانے سے ان کے ریپ کے واقعات بڑھیں گے۔ شنکراچاری سوروپاند کا یہ بیان مہاراشٹر کے شنی شنگناپر مندر میں خواتین کے داخلے کی اجازت کے بعد آیا ہے۔ اس مندر میں صدیوں سے صرف مردوں کو داخلے کی اجازت تھی۔ ممبئی ہائی کورٹ نے گذشتہ ماہ تمام مندروں میں خواتین کے داخلے کے حق کو تسلیم کیا تھا۔ انڈیا میں خواتین طویل عرصے سے شنی دیوتا مندر میں داخل ہونے کا مطالبہ کر رہی تھیں۔ بھارت میں ہندوؤں کے مذہبی رہنما کے اس بیان پر سخت تنقید ہو رہی ہے جس میں انھوں نے کہا تھا کہ شنی دیوتا کے مندر میں خواتین کے جانے سے ان کے ریپ کے واقعات بڑھیں گے۔ شنکراچاری سوروپاند کا یہ بیان مہاراشٹر کے شنی شنگناپر مندر میں خواتین کے داخلے کی اجازت کے بعد آیا ہے۔ اس مندر میں صدیوں سے صرف مردوں کو داخلے کی اجازت تھی۔ ممبئی ہائی کورٹ نے گذشتہ ماہ تمام مندروں میں خواتین کے داخلے کے حق کو تسلیم کیا تھا۔ انڈیا میں خواتین طویل عرصے سے شنی دیوتا مندر میں داخل ہونے کا مطالبہ کر رہی تھیں۔ اس منظوری کے بعد 94 سالہ شنکراچاری سوروپاند نے کہا: ’خواتین کو شنی دیوتا مندر میں داخل ہونے کی اجازت دی گئی ہے۔ خواتین اب شنی دیوتا مندر میں پوجا کر رہی ہیں۔ ایسے میں جب شنی دیوتا کی آنکھیں خواتین پر پڑیں گی تو اس سے ریپ کے واقعات بڑھیں گے۔‘ شنی شنگناپر مندر میں خواتین کو گذشتہ 400 سال رسائی کی اجازت نہیں تھی۔ مندر کے حکام کے مطابق ایسا اس لیے تھا تاکہ شنی دیوتا سے نکلنے والے ریڈیشن سے خواتین کی حفاظت کی جا سکے۔ اس دعوے کے مطابق اگر حاملہ خواتین مندر کے اندر داخل ہوتی ہیں، تو ان کے جنین پر اثر ہو سکتا ہے۔ ممبئی ہائی کورٹ کے مطابق اگر خواتین کو شنی دیوتا مندر میں داخل ہونے سے روکا گیا تو ایسا کرنے والوں کو چھ ماہ کی قید ہو سکتی ہے۔
Read 251 times

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

Pakistanviews.org

pakistanviews.org stands as a website enlightening the masses with all information related to current affair, entertainment, sports, technology, etc. It has been brought into existence to ensure that voice of Pakistan reaches the masses. Ensuring that a true picture of Pakistan is portrayed in the right manner to the world. The website is to bring forth the real picture of Pakistan negating avenues of Terrorism and Non-State Acto